رمضان میں نبی ﷺ کا بتایا ہوا عمل صرف بیس منٹ روزانہ بس شادی جاب یا مال دولت رزق کا کاروبار

جیسا آپ کے علم میں ہے سب سے مبارک والا ، رحمتوں والا اور سعادتوں والا جس میں اللہ تعالیٰ کی طرف سے رحمتیں بارش کی قطروں کی طرح برستی ہیں۔ جن میں انوارات اور برکات کا نزول ہوتا ہے۔ یعنی رمضان المبار ک کا پیار ا مہینہ شرو ع ہوچکا ہے۔ چاہے لوگ جتنے بھی گن اہ گارہوں اور اس کی کوشش ہوتی ہے کہ میں کچھ پڑھ لوں۔

اللہ اور اس کے رسول کے بتائے کچھ ذکر و اذکار ، تلاوت ، ذکر وعبادت میں وقت سرف کردوں۔ تو بڑے سے بڑا گن اہ گار بھی اپنے گن اہ سے باز آجاتا ہے۔ شیاطین قید ہوجاتے ہیں۔ ایسے ایام کو قیمتی بنا ئیں ۔ اس میں ایک عمل اور وظیفہ بتاتے ہیں۔ جس کے بارے میں حضور اکرمﷺ کے بہت سارے احادیث مبارکہ یہ تاکید بھی ملتی ہے کہ رمضان المبار ک میں کثرت کے ساتھ ” لا الہ الا اللہ ” کا ورد رکھیں۔ اس کا ذکر و اذکار کرتے رہیں۔ اس کا طریقہ کار یہ ہے کہ آپ کے جو بھی مقاصد ہیں۔ جس مقصد کے لیے کرنا چاہتے ہیں۔ جو بھی آپ کو پریشانی ہے۔ چاہے مال ودولت کی پریشانی ہے، شادی بیا ہ کی پریشانی ہے، کاروبار کی پریشانی ہےیا ویسے حصول تقوی کے لیے یا اجروثواب کے لیے کرنا چاہتے ہیں۔ آپ روزانہ تین ہزار مرتبہ گن کر “لا الہ الا اللہ ” کا ورد کریں۔

آپ شروع میں یہ نیت کرلیں۔ اور گنتے جائیں کہ میں نے ستر ہزار مرتبہ “لا الہ الا اللہ ” پڑھنا ہے۔ یعنی اس کو ایک نصاب کہتے ہیں۔ ایک روایت ہے جو شخص ستر ہزار مرتبہ “لاالہ الااللہ”کا نصاب پورا کرکے کسی کو بخش دے اللہ اس کی مغفرت فرمادیتے ہیں۔ تو کل قب ر واور حشر اور قیامت اللہ تعالیٰ اس کی مغفرت فرمادیں گے۔یہ اتنا عظیم کلمہ ہے۔ صرف ایک فضیلت ہے اس کو ترازو کے ایک پلڑے میں رکھ دیا جائے۔ اور دوسرے پلڑے میں “لا الہ الا اللہ ” یہ بول رکھ دیے جائیں۔ تو یہ بھاری ہوجائےگا۔ اس کا جو سب سے عظیم کلمہ ہے ۔

اور جس کے بارے میں احادیث مبارکہ اور پیار ے آقا ﷺ کی بہت سارے فرامین یہ تحقیق ملتی ہے کہ کثرت کے ساتھ “لا الہ الا اللہ ” پڑھا کریں۔ تو شروع میں یہ نیت کرلیں۔ ہم نے ستر ہزار مرتبہ کا نصاب پورا کرنا ہے۔ کم از کم قرآن مجید کی تلاو ت دوسرے ذکرواذکار کے ساتھ ساتھ تین ہزار مرتبہ “لاالہ الا اللہ” اس کی ضربیں لگائیں ۔ اور اس کے بعد اپنے مقاصد کے حصول کے لیے اللہ تعالیٰ سے دعائیں مانگیں۔ اللہ تبارک وتعالیٰ جتنی بھی امت مسلمان ہیں۔ رمضان المبار ک کی جتنی خیریں ہیں ۔ جتنی سعادتیں ہیں۔ اور رحمتیں ہیں۔

اللہ تبارک وتعالیٰ مجھ سمیت اورتما م مسلمان کو وہ عطافرمائیں۔اور تمام خیریں اور تمام بڑائیاں عطافرمائیں۔ اللہ تعالیٰ ہم سب کو حاسدین لوگوں کے حسد سے محفو ظ رکھے۔ اللہ تعالیٰ ہماری زندگیوں میں باربار رمضان المبارک کا مہینہ لائے۔ جتنی تکلیفیں ہیں۔ جتنی پریشانیاں ہیں۔ یا اللہ! اپنے فضل وکرم سے ان تمام پریشانیوں اور تکلیفوں سے محفو ظ فرما۔ آمین۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *